دل تھام کر بیٹھیں صاحب …، اب ہماری باری ہے، مصطفیٰ کمال